شطرنج میں کپتان نہیں ہوتا

شطرنج شاہی کھیل ہے۔ کیونکہ اس میں بادشاہ، ملکہ، وزیر، فیل اور پیادے ہوتے ہیں۔ اس کو کھیلنے والے ابتدائی کھلاڑی بھی بادشاہ ہوتے تھے۔ شطرنج کا اصل بادشاہ کھیل کے میدان میں کھڑا بادشاہ نہیں، بلکہ اصل بادشاہ وہ کھلاڑی ہوتا ہے، جو شطرنج کے بادشاہ کو اپنی مرضی کے مطابق ایک مہرے کے…

Read more

نوازشریف کی تڑیاں اور شہباز شریف کے ترلے

شہباز شریف اور نوازشریف ایک ہی کھوٹے سیاسی سکے کے دو رخ ہیں۔ نوازشریف اور مقتدرہ کی اناؤں کی ذاتی لڑائی کو جمہوریت، انسانی حقوق اور آئینی برتری کی لڑائی سمجھ کر محمود خان اچکزئی، اسفندیار ولی خان، کسی حد تک آصف علی زرداری اور دوسرے جمہوریت پسند مع باضمیر پریس، نوازشریف کے کاندھے سے…

Read more

وزیراعظم مولانا فضل الرحمان اور مقتدر قوتوں کا پلان بی

مسلم لیگ کے تاسیسی مقاصد میں، سر فہرست مقصد، برصغیر کے مسلمانوں کے دلوں میں انگریز آقا کیلئے محبت اور وفاداری کے جذبات کا فروغ تھا۔ بابائے قوم وکیل تھے۔ اس لئے مختصر اور نپے تلے الفاظ ادا کرتے تھے۔ انہوں نے ایک دفعہ مسلم لیگی سیاستدانوں کے بارے میں کہا تھا کہ میری جیب…

Read more

مولانا وزیراعظم کے فطری حلیف تھے حریف نہیں

 مولانا فضل الرحمان صاحب، ایک پریگماٹسٹ اور کثیر المقاصد شخصیت ہونے کی وجہ سے، عمران خان جیسے سیاسی نوارد کیلئے بہترین فطری حلیف تھے۔ اگر عمران خان ماضی میں کرکٹ کے بہترین آل راؤنڈر تھے، تو مولانا صاحب سیاست میں بہترین آل راؤنڈر شمار ہوتے ہیں۔ مولانا کو ٹیم میں شامل کرنے کی وجہ سے…

Read more

ٹرولائیز، سیکرڈ گیمز، آپریشن ٹائیگر ٹرمپ اور وزیراعظم کی تقریر

اقوام متحدہ میں وزیراعظم عمران خان کی گئی تقریر پر حسب دستور، ایک طرف سے تحسین کے ڈونگرے برسائے جارہے ہیں، تو دوسری طرف سے ناک بھوں چڑھائی جارہی ہے۔ ایک طرف والے اسے وزیراعظم کی بہادری، دوراندیشی اور اسلام دوستی کی نشانی بتاتے ہیں تو دوسری طرف اسے ان کی بے شمار تقریروں اور…

Read more

کھلاڑی اور سیلیکٹرز کا سیاستدان

وہ ایک کھلاڑی تھا، باقی اچھے کھلاڑیوں کی طرح۔ آپ اپنے محلے، علاقے، کلب یا اردگرد نظریں دوڑائیں گے تو آپ دیکھ لیں گے کہ ایک کھلاڑی کو کھیلنے کے علاوہ، پڑھائی لکھائی اور دوسری معاشرتی سرگرمیوں میں کتنی دلچسپی ہوتی ہے؟ پڑھائی لکھائی نہ کرنا تو کھلاڑی کے لئے اپنے بزرگوں اور اساتذہ کی…

Read more

پنجابی مولوی کی خصوصیات

پنجاب کا مولوی ایک باشعور، غیرتمند، قوم پرست، عزت دار اور اپنی قوم کا ہمدرد انسان ہے۔  وہ اپنی قوم کو ہر وقت محفوظ اور خوشحال دیکھنے کا خواہش مند ہوتا ہے اس لیے اپنی قوم کو دوسرے ممالک اور اقوام کے ایجنڈے کے بھینٹ نہیں چڑھاتا۔ وہ اپنی قوم کو شدت پسندی اور شدت…

Read more

پاکستانی ہم جنس پرست

پاکستانی اپنے ملک سے بے پناہ پیار کرتے ہیں، لیکن شرط یہ ہے کہ وہ خود پاکستان سے باہر ہوں۔ ملک کے اندر کھل کر ہر پاکستانی جی بھر کر سارا دن اس ملک کو کوستا ہے۔ پاکستان میں سب سے بڑی کامیابی بھی پاکستان سے نکلنے اور مغربی ممالک یا امریکہ میں سیٹل ہونے کو سمجھا جاتا ہے۔ ہر صاحب ثروت کوشش کرتا ہے کہ اپنے اور اپنے بچوں کے لئے بیرون ملک کوئی ٹھکانہ بنادے۔ ہر سیاستدان، حکومت اور لوٹ مار، یہاں کرتا ہے۔ لیکن اس کی خواہش ہوتی ہے کہ برطانوی امریکی یا کم از کم یورپئین نیشنلٹی اپنے اور اپنے خاندان کے لئے حاصل کرے۔ اور یہی صورت حال ان کرتا دھرتاؤں کی بھی ہے۔ جن کا نام لیتے ہوئے ہر کوئی ڈرتا ہے لیکن جن کا نام لئے بغیر بھی اب ہر کوئی جانتا ہے۔

Read more

انسانی رویوں کو تبدیل کرنے والے عناصر و عوامل

خوبصورت چہروں، لمبے چمکدار بالوں، تلوار کی طرح کاٹتی اور مقناطیس کی طرح کھینچتی مسکانوں کے مالک عورتیں اور مرد، جنہیں ہم روز مختلف اشتہاری فلموں میں ٹی وی سکرینوں اور بل بورڈوں پر دیکھتے ہیں۔ جنہیں نت نئے انداز میں، مختلف مصنوعات کی فروخت کے لئے اشتہاری کمپنیاں استعمال کرتی ہیں۔ ان کا حسن، طرحداری اور کشش ان کا ذاتی، فطری اور خدا داد ہوتا ہے۔ یہ جس شیمپو، صابن، کریم اور کولڈ ڈرنک کی تعریف کرتے ہوئے نظر آتے ہیں۔

Read more

چار شکست خوردہ تاریخی کردار اور پاکستانی سیاسی جنگ

عمران خان صاحب کو اللہ لمبی عمر اور سکون کی زندگی دے۔ ان کا مایوسانہ تاریخی اظہاریہ بڑا دل شکن ہے۔ تاریخ سب کو اچھی لگتی ہے۔ بس شرط یہ ہے کہ بندے کی اپنی تاریخ اچھی ہو۔ ہماری تاریخ، بہادر اور فتحیاب کرداروں سے بھری پڑی ہے۔ اگرچہ ان میں زیادہ تر نے ہمیں یعنی برصغیر کے باشندوں کو شکستیں دی تھیں۔ لیکن شکست خوردہ تاریخ تھوڑی لکھتے ہیں۔ تاریخ تو فاتحین کی کہانی ہے۔ اس لیے ہم اپنے بچوں کے نام، خود کو شکست دینے والے غیر ملکی حملہ آوراور فاتح سکندر کے نام پر رکھتے ہیں۔ اور اس کا ذکر کرتے ہوئے آج بھی پوری عزت کے ساتھ اسے سکندر اعظم کہتے ہیں۔ اور اپنے پنجابی ہم وطن پورس کا نہ پورا نام یاد ہے نہ قوم اور قبیلہ، اور نہ آج تک پورس کسی کا نام سنا ہے۔

Read more