کورونا کو ہم جوتے کی نوک پر رکھتے ہیں

عرفان صاحب کے گھر میں دو کمرے ہیں اور ایک لاؤنج ہے۔ اس وقت صورتحال یہ ہے کہ ان صاحب کو کرونا کا مرض لاحق ہو گیا ہے اور وہ کافی بڑھ گیا ہے۔ شدید بخار ہے اور سر میں درد بہت زیادہ ہے۔ سانس لینے میں دشواری اتنی شدید ہے کہ اپنے ہی کمرے کے ساتھ ملحق باتھ روم تک جانے سے بھی ان کی سانس اکھڑ جاتی ہے۔ ان کے کمرے کے ساتھ لاؤنج ہے۔ لاؤنج میں ان کی بیگم رہ رہی ہیں۔ انہیں بھی کرونا کی علامات شروع ہوچکی ہیں اور ان کا ٹیسٹ بھی پازیٹیو آیا ہے۔

Read more

احمدیوں کی ایک اور سازشں

دنیا میں تین قسم کے لوگ رہتے ہیں، مسلم، غیر مسلم اور احمدی۔ یہ احمدی بہت ہی بڑے سازشی لوگ ہیں۔ ابھی ابھی انہوں نے پاکستان اور اسلام کے خلاف ایک اور گھناؤنی سازش کی اور اپنے آپ کو پاکستان کی اقلیتوں کی لسٹ میں باقاعدہ شامل کروا لیا ہے۔ ہم سب جانتے ہیں کہ…

Read more

بیٹیوں کا وراثت میں حق اور ریاست کی ذمہ داری

ایک دفعہ ایک ان پڑھ غریب محنت کش مسیحی خاتون جو صبح سے شام تک کوئی چھ گھروں میں صفائی کا کام کرتی ہے وہ اپنے خدا سے ناراضگی کا اظہار کر رہی تھی۔ کہہ رہی تھی کہ باپ کی جائیداد میں بیٹیوں کا حصہ نہ رکھ کر خدا نے عورتوں کے ساتھ اچھا نہیں…

Read more

ماورائے عدالت قتل کرنے والے ہیرو کیوں ہیں؟

تیس برس پہلے کی بات ہے۔ میں نے اتفاقاً پولیس کے چند نوجوانوں کا پنجاب یونیورسٹی لاہور کے چار غنڈا نما طالب علموں کو کو گرفتار کرنے کا تماشا ایکشن دیکھا۔ یہ واقعہ پنجاب یونیورسٹی کے نیو کیمپس سے کوئی دو سو گز دور نہر کے کنارے رونما ہوا تھا۔ کافی تعداد میں راہ گیر…

Read more

عورتوں میں بے حیائی کی ویکسین ڈھونڈیں

چین میں کورونا وائرس کی وبا پھیلی تو پاکستان میں بہت لوگوں کو پہلے سے ہی خبر تھی کہ اصل معاملہ کیا ہے۔ ہم نے لوگوں کو بتا دیا کہ امریکہ سے چین کی ترقی برداشت نہیں ہونا تھی۔ اور پھر یہودی بھی امریکہ کے ساتھ ملے ہوئے تھے کیونکہ چین پاکستان کا اصلی ہمدرد…

Read more

بھارتی جنتا سوچو اگر حافظ سعید پاکستان کا وزیر اعظم ہوتا

شاباش پاکستانی ووٹر! ہم کسی مذہبی جنونی اور دہشت گرد کو کبھی بھی ووٹ ڈال کر حکومت میں نہیں لائے۔ بدقسمتی سے دہشت گردی میں ہمارا گراف بہت اونچا چلا گیا ہے۔ دنیا میں جہاں کہیں بھی دہشت گردی کا واقعہ ہوتا ہے ہم عام پاکستانیوں کو دہشت گردی کے نتیجہ میں ہونے والے جانی نقصان کے افسوس کے ساتھ یہ فکر بھی لاحق ہوتی ہے کہ ابھی اس واقعہ میں پاکستان کا نام آئے گا۔ دہشت گرد پاکستانی ہو گا یا اس نے کبھی پاکستان میں تربیت لی ہو گی۔ یا کسی بھی طریقے سے پاکستان کے دہشت گردی کے واقعہ کے لنک نکلنے کے امکانات تو رہتے ہیں۔ پچھلے دس بارہ سالوں میں پاکستان کے اندر بھی دہشت گردی کے ہزاروں واقعات ہو چکے ہیں اس لئے دہشت گردی میں ہمارا گراف اونچا تو ہے۔

Read more

آٹھ مارچ اور تمہاری پیدائش پر ہمارا رونا دھونا

ان گندی تصویروں کو دیکھ کر دل بڑا دکھی ہوا۔ حالانکہ گندی تصویروں کو دیکھ کر اکثر تو دل خوش ہو جاتا تھا لیکن اس دفعہ معاملہ کچھ اور تھا۔ یہ گندی تصویریں تو ہماری پسندیدہ اور خوبصورت گندی تصویروں کو محض لفظوں میں بیان کر رہی تھیں، جو کہ بہت غلط اور ناپسندیدہ عمل ہے۔ یہ گندی تصویریں تو ہماری اپنی ان عورتوں نے اٹھا رکھی تھیں جنہوں نے خود تو کپڑے پہنے ہوئے تھے لیکن ہمارے معاشرے کے کپڑے اتار رہی تھیں اور اسے تباہ کرنے کے درپے تھیں۔ اور ہم مرد آئینہ دکھا دکھا کر چڑا رہی تھیں۔افسوس کہ آزادی کے نام پر اپنے اصلی فرائض سے منکر کچھ خواتین آج اس نہج پر کھڑی ہو چکی ہیں کہ انھیں یہ بھی نہیں پتا کہ آزادی کے نام پر گندی گندی باتیں لکھ کر ان کے ساتھ فوٹو بنوا رہی ہیں جب کہ انہیں شرما کر دور بھاگنا چاہیے تھا۔

Read more

کھاتے پیتے لبرل گھروں کی مادر پدر آزاد عورتیں

وہ خوب صورت، آزاد خیال، سگھڑ، پڑھی لکھی اور ذمہ دار تھی اور ایک ماڈرن تہذیب یافتہ مڈل کلاس گھر میں پیدا ہوئی تھی۔ یونیورسٹی تک بہترین تعلیم پائی اور اچھی ملازمت مل گئی۔ شادی کے سلسلے میں بھی کوئی پابندی نہ تھی اور اپنی پسند کے لڑکے سے شادی ہو گئی۔ سسرال کا ماحول بھی میکے جیسا ہی تھا۔ نوکری جاری رہی۔ کتابیں پڑھنا، فلمیں دیکھنا، گھومنا پھرنا اور دوستوں سے ملنا جلنا ویسا ہی رہا جیسے پہلے تھا۔ کچھ عرصہ ہی جوائنٹ فیملی میں رہنا پڑا اور پھر الگ گھر لے لیا اور ہنسی خوشی شفٹ ہو گئے۔ سبھی لوگ بہت پیار کرنے والے اور مددگار تھے۔ سسرال اور میکے سے ملنے کی روٹین بن گئی لیکن روٹین پر عمل بہت ضروری بھی نہ تھا۔ اپنی مرضی اور ضرورت کے مطابق اس میں تبدیلی بھی کر لیتے تھے۔

Read more

جاوید چوہدری اور طالبان ترجمان احسان اللہ کی 2014 میں گفتگو

2014  میں کراچی میں دہشت گردی کے واقعہ میں ایکسپریس ٹی وی چینل کے تین لوگ شہید ہوئے۔ احسان اللہ نے جاوید چوہدری صاحب کے ساتھ لائیو ٹی وی پر اس کی ذمہ داری فخر کے ساتھ قبول کی۔ وہ گفتگو ملاحظہ فرمائیں۔

٭٭٭      ٭٭٭

جاوید چوہدری۔ طالبان کے ترجمان جناب احسان اللہ احسان صاحب نے ابھی فون کیا ہے۔ ۔۔۔ احسان اللہ احسان صاحب اس وقت ہمارے ساتھ ہیں۔۔۔ احسان صاحب ۔۔۔ یہ جو واقعہ ہوا ہے انتہائی افسوس ناک اس پر آپ کوئی تبصرہ ۔۔۔

احسان اللہ احسان: بسم اللہ الرحمن الرحیم۔ سب سے پہلے تو میں یہ بتانا چاہتا ہوں کہ یہ حملہ طالبان نے کیا ہے اور ہم اس حملے کی ذمہ داری قبول کرتے ہیں۔

Read more

بوٹ کی کہانی خدمت سے شہرت تک

جوتا بڑی نعمت ہے۔ عوام اور حکومت دونوں ہی جوتے کے سہارے چلتے ہیں فرق صرف یہ ہے کہ لوگ جوتے پاؤں میں پہن کر چلتے ہیں اور حکومت سر پر پہن کر چلتی ہے۔ اور پھر سردی میں اگر آپ بوٹ کے بغیر چلنے کی کوشش کریں گے تو آپ کے پاؤں سن ہو…

Read more