فلموں اور گیتوں میں عید کا دن

ایک زمانہ تھا جب ملک میں فلمساز، اسٹوڈیو مالکان اور تقسیم کار، سنیما مالکان سے پیشگی معاملات طے کر کے اپنی فلموں کو عید کے موقع پر نمائش کے لئے پیش کیا کرتے تھے۔ کیوں کہ عید پر لگنے والی بیشتر فلمیں بہت عمدہ بزنس کرتی تھیں لیکن میں نے عید پر فلمیں ناکام ہوتے…

Read more

سحر انگیز اور دل موہ لینے والے موسیقار نثار بزمی

جل گاؤں، ریاست مہاراشٹرا، بھارت میں سید قدرت علی کے ہاں 1924 کو بچے کی پیدائش ہوئی۔ سید نثار احمد نام تجویز ہوا۔ کسے معلوم تھا کہ آگے چل کر یہ برصغیر پاک و ہند میں نام کرے گا۔ ابھی گیارہ بارہ سال کی عمر ہو گی کہ معاشی مسائل سے نبٹنے کی خاطر ان کو ( اس وقت ) بمبئی کی ایک نامور قوال پارٹی میں شمولیت اختیار کرنا پڑی۔ سر تال خدائی عطیہ تھا جب کہ موسیقی کے اسرار و رموز سے کوئی واقفیت نہیں تھی۔ تب قسمت نے یاوری کی اور 1930 کے اواخر میں بمبئی کی موسیقی میں اہم شخصیت خان صاحب امین علی خان کی شاگردی میں چار سال رہے۔ یوں محض 13 سال کی عمر میں مروجہ راگ راگنیوں اور آلات موسیقی میں خاصی مہارت حاصل کر لی۔ 1939 میں صرف 15 سال کی عمر میں آل انڈیا ریڈیو میں اسٹاف آرٹسٹ ہو گئے۔ یہیں ( بمبئی ) کے ریڈیو اسٹیشن سے نشر ہونے والے ڈراموں میں گیتوں کی طرزیں بھی بنائیں۔ ان کی بنائی ہوئی دھنوں پر رفیق غزنوی اور امیر بائی کرناٹکی جیسے نامور موسیقاروں اور فنکاروں نے گایا۔ یہ معمولی بات نہیں۔ ایسے کامیاب کام کے بعد سید نثار کی ماہانہ تنخواہ بڑھا کر پچاس روپے کر دی گئی جو اس وقت ایک معقول رقم مانی جاتی تھی۔

Read more

بھارتی فلمی صنعت کی کامیاب ترین خاتون موسیقار: اوشا کھنہ

مجھے اتنا تو پتا ہی تھا کہ اوشا کھنہ بھارت کی ایک مشہور خاتون موسیقار ہیں۔ ان کے بعض گیت مجھے زبانی یاد بھی تھے لیکن ان کے بارے میں مزید جاننے کا شوق مجھے پلے بیک سنگر ایس بی جون صاحب نے دلایا۔ فلم ’‘ سویرا ”( 1959 ) میں ماسٹر منظور حسین شاہ…

Read more

موسیقار شوکت علی دہلوی المعروف ناشاد

” میرے دو دادا ترکستان سے کسی مہم میں لشکریوں کے ساتھ آئے پھر یہیں کے ہو رہے۔ جب ہی ہمارے خاندان میں ہاشمی سلسلہ چلتا ہے۔ میرے ابا نے بھی بعض فلموں میں شوکت علی ہاشمی کے نام سے موسیقی دی۔ موسیقی میں ہمار ا دہلی گھرانہ ہے۔ ہمارا رستم پارک، لاہور والا مکان…

Read more

موسیقارمصلح الدین اور پلے بیک سنگر ناہید نیازی

26 فروری 1941 کو پیدا ہونے والی شاہدہ نیازی المعروف ناہید نیازی مشہور شاعر، گلوکار موسیقار اور براڈکاسٹرجناب سجاد سرور نیازی کی صاحبزادی اور پلے بیک سنگر نجمہ نیازی کی بڑی بہن ہیں۔ ناہید نیازی کے تذکروں میں ملتا ہے کہ اِن کے اندر کے گلوکار کو خواجہ خورشید انور نے دریافت کیا۔ ویسے بھی…

Read more

وائلن نواز سعید احمد کی کھری کھری باتیں

گراموفون ریکارڈ، کیسٹ، سی ڈی، ریڈیو پاکستان اور دیگر ایف ایم اسٹیشنوں پر لگنے والے فِلمی اور غیر فِلمی گانے ہوں یا ٹیلی وژن پر موسیقی کی لایؤ محفلیں۔ ۔ ۔ ۔ ۔ اِن سب کی ایک مشترکہ چیز۔ ۔ ۔ ۔ ۔ میوزیشن یا سازندے۔ یہ ہیں۔ ۔ ۔ ۔ ۔ تو موسیقی کا…

Read more

پاکستان میں پاپ موسیقی کے معمار: عالمگیر

پاکستان میں پاپولر یعنی ''پاپ'' موسیقی رُو شناس کرانے والوں میں احمد رشدی کے بعد عالمگیر کا نام سرِ فہرست ہے۔ میں پاکستان ٹیلی وژن کراچی مرکز کے شعبہ پروگرام سے 1980ء میں منسلک ہوا تو اُس وقت تک عالمگیر کا نام بن چکا تھا۔ اس میں کاشف لمیٹڈ کے مشترک فلم ساز ایم احمد…

Read more

کیریکٹر ایکٹر اور پاکستان ٹیلی وژن کے اداکار کمال ایرانی

میرے ہم مکتب اور ہم جماعت سید شبیر نواز صفوی کے چچا مشہور آدمی تھے۔ اکثریت کے چچا اور ماموں ویسے ہی پیارے اور میٹھے ہوتے ہیں اور شبیر کے یہ چچا کمال ایرانی تو واقعی کمال کے چچا تھے۔ 05 اگست 1932 بروز جمعہ، پیدا ہونے والے کمال الدین صفوی المعروف کمال ایرانی، پاکستانی…

Read more

پاکستان فلم کی عہد ساز شخصیت: گیت نگار تنویر نقوی

برِ صغیر کے نامور گیت نگار تنویر ؔ نقوی کے فلمی گیت پاک و ہند کی تقسیم سے پہلے ہی عوام میں بے حد مقبول ہو گئے تھے۔ ”دنیائے ادب و فلم میں تنویر ؔنقوی کا نام ایک معتبر، صاحب ِکمال و جمال اور مستند فطری شاعر کے طور پر زندہ و تابندہ و پائندہ…

Read more

صدارتی تمغہ حسنِ کارکردگی ( بعد از مرگ ) اور نگار ایوارڈ یافتہ گیت نگار مسرور ؔ انور

سوہنی دھرتی کے حوالے سے ایک ہی نام ذہن میں آتا ہے جو مسرور انور کاہے۔ اُن کے ساتھ راقم نے خاصا وقت گزارا۔ یہ روز مرہ معاملات میں کیسے تھے؟ گھر میں بحیثیت باپ اور دیگر افراد سے تعلقات میں کیسے تھے؟ ایک اِنسان کے ناتے راقِم نے اُن کو کیسا پایا؟ مختصر عرض…

Read more